قرآن مجید انسانوں کی ہدایت اور رہنمائی کے لئے نازل کیا گیا ہے

    قرآنی فیصلے

  • ذَلِكَ الْكِتَابُ لَا رَيْبَ فِيهِ هُدًى لِلْمُتَّقِينَ(سورہ بقرہ:2)
  • ’’ یہ وہ کتاب ( قرآن مجید ) ہے جس میں کسی قسم کا شک نہیں، ہدایت ہے اللہ سے ڈرنے والوں کے لئے ‘‘۔
  • ﴿قُلْ مَنْ كَانَ عَدُوًّا لِجِبْرِيلَ فَإِنَّهُ نَزَّلَهُ عَلَى قَلْبِكَ بِإِذْنِ اللَّهِ مُصَدِّقًا لِمَا بَيْنَ يَدَيْهِ وَهُدًى وَبُشْرَى لِلْمُؤْمِنِينَ(سورہ بقرہ:97)
  • ’’ کہہ دیجئے جو دشمن ہے جبریل کا توپس بیشک اس نے اسے اتارا ہے تیرے دل پر اللہ کے حکم سے تصدیق کرنے والا ہے اس کی جو اس سے پہلے (کتابیں گزری ) ہیں اور ہدایت اور خوشخبری ہے مومنوں کے لیے‘‘ ۔
  • ﴿شَهْرُ رَمَضَانَ الَّذِي أُنْزِلَ فِيهِ الْقُرْآنُ هُدًى لِلنَّاسِ وَبَيِّنَاتٍ مِنَ الْهُدَى وَالْفُرْقَانِ (سورہ بقرہ:185)
  • ’’رمضان کا مہینہ وہ (مہینہ) ہے نازل کیا گیا جس میں قرآن (جو) ہدایت ہے انسانوں کے لیے اور (اس میں) روشن نشانیاں ہیں ہدایت کی اور (حق کو باطل سے) جدا کرنے والی ۔ ۔ ۔ ۔ ‘‘۔
  • هَذَا بَيَانٌ لِلنَّاسِ وَهُدًى وَمَوْعِظَةٌ لِلْمُتَّقِينَ(سورہ آل عمران:138)
  • ’’ یہ ( اللہ کا) بیان ہے انسانوں کے لئے اور ہدایت اور نصیحت ہے متقیوں کے لئے ‘‘۔
  • يَا أَهْلَ الْكِتَابِ قَدْ جَاءَكُمْ رَسُولُنَا يُبَيِّنُ لَكُمْ كَثِيرًا مِمَّا كُنْتُمْ تُخْفُونَ مِنَ الْكِتَابِ وَيَعْفُو عَنْ كَثِيرٍ قَدْ جَاءَكُمْ مِنَ اللَّهِ نُورٌ وَكِتَابٌ مُبِينٌ١٥ يَهْدِي بِهِ اللَّهُ مَنِ اتَّبَعَ رِضْوَانَهُ سُبُلَ السَّلَامِ وَيُخْرِجُهُمْ مِنَ الظُّلُمَاتِ إِلَى النُّورِ بِإِذْنِهِ وَيَهْدِيهِمْ إِلَى صِرَاطٍ مُسْتَقِيمٍ(سورہ مائدہ:15)
  • ’’اے اہل کتاب ! بلا شبہ آگیا ہے تمہارے پاس ہمارا رسول جو کھول کھول کر بیان کرتا ہے تمہارے لیے بہت کچھ اس میں سے جو تم چھپاتے تھے۔ کتاب میں سے، اور درگزر کرتا ہے بہت سی باتوں سے۔ بیشک آگئی ہے تمہارے پاس اللہ کی طرف سے روشنی اور کھلی کتاب ۔ دکھاتا ہے اس کے ذریعہ سے اللہ ہر اس شخص کو جو طالب ہو اس کی رضا کا، سلامتی کی راہیں اور نکالتا ہے ان کو اندھیروں سے روشنی کی طرف اپنے اذن سے اور چلاتا ہے ان کو سیدھی راہ پر‘‘۔
  • قُلْ أَيُّ شَيْءٍ أَكْبَرُ شَهَادَةً قُلِ اللَّهُ شَهِيدٌ بَيْنِي وَبَيْنَكُمْ وَأُوحِيَ إِلَيَّ هَذَا الْقُرْآنُ لِأُنْذِرَكُمْ بِهِ وَمَنْ بَلَغَ أَئِنَّكُمْ لَتَشْهَدُونَ أَنَّ مَعَ اللَّهِ آلِهَةً أُخْرَى قُلْ لَا أَشْهَدُ قُلْ إِنَّمَا هُوَ إِلَهٌ وَاحِدٌ وَإِنَّنِي بَرِيءٌ مِمَّا تُشْرِكُونَ(سورہ انعام:19)
  • ’’ کہہ دو کون چیز زیادہ بڑی ہے گواہی میں، کہہ دو اللہ ہے گواہ میرے درمیان اور تمہارے درمیان اور وحی کیا گیا ہے میری طرف یہ قرآن تاکہ میں ڈراؤں تمہیں اس کے ذریعے اور جس کو بھی پہنچے کیا بیشک تم گواہی دیتے ہو (اس بات کی) کہ بیشک اللہ کے ساتھ دوسرے معبود بھی ہیں ؟ آپ کہہ دیں میں تو گواہی نہیں دیتا، کہہ دیں درحقیقت وہی ایک معبود ہے اور بیشک میں بیزار ہوں اس سے جو تم شریک بناتے ہو‘‘۔
  • أَوْ تَقُولُوا لَوْ أَنَّا أُنْزِلَ عَلَيْنَا الْكِتَابُ لَكُنَّا أَهْدَى مِنْهُمْ فَقَدْ جَاءَكُمْ بَيِّنَةٌ مِنْ رَبِّكُمْ وَهُدًى وَرَحْمَةٌ فَمَنْ أَظْلَمُ مِمَّنْ كَذَّبَ بِآيَاتِ اللَّهِ وَصَدَفَ عَنْهَا سَنَجْزِي الَّذِينَ يَصْدِفُونَ عَنْ آيَاتِنَا سُوءَ الْعَذَابِ بِمَا كَانُوا يَصْدِفُونَ(سورہ انعام:157)
  • ’’ یا یہ کہو اگر بلاشبہ اتاری جاتی ہم پر کتاب یقینا ہم ہوتے زیادہ ہدایت یافتہ ان سے پس یقینا آچکی تمہارے پاس روشن دلیل تمہارے رب کی طرف سے اور ہدایت اور رحمت، پس کون ہے زیادہ ظالم اس سے جو جھٹلائے اللہ کی آیتوں کو اور اعراض کرے ان سے عنقریب ہم سزا دیں گے ان کو جو اعراض کرتے ہیں ہماری آیات سے برے عذاب کی اس وجہ سے جو تھے وہ اعراض کرتے‘‘۔
  • كِتَابٌ أُنْزِلَ إِلَيْكَ فَلَا يَكُنْ فِي صَدْرِكَ حَرَجٌ مِنْهُ لِتُنْذِرَ بِهِ وَذِكْرَى لِلْمُؤْمِنِينَ(سوررہ اعراف:2)
  • ’’یہ ایک کتاب ہے جو نازل کی گئی آپ کی طرف تو نہ ہو آپ کے سینے میں کوئی تنگی اس سے تاکہ آپ ڈرائیں اس کے زریعے اور نصیحت ہے مومنوں کے لیے‘‘۔
  • ﴿وَلَقَدْ جِئْنَاهُمْ بِكِتَابٍ فَصَّلْنَاهُ عَلَى عِلْمٍ هُدًى وَرَحْمَةً لِقَوْمٍ يُؤْمِنُونَ٥٢﴾ [الأعراف: 52](سوررہ اعراف:52)
  • ’’اور یقناً ہم لائے ان کے پاس ایسی کتاب کہ ہم نے تفصیل سے بیان کیا ہے اسے علم کی بنیاد پر ہدایت اور رحمت بنا کر اس قوم کے لیے جو ایمان رکھتے ہیں‘‘۔
  • وَإِذَا لَمْ تَأْتِهِمْ بِآيَةٍ قَالُوا لَوْلَا اجْتَبَيْتَهَا قُلْ إِنَّمَا أَتَّبِعُ مَا يُوحَى إِلَيَّ مِنْ رَبِّي هَذَا بَصَائِرُ مِنْ رَبِّكُمْ وَهُدًى وَرَحْمَةٌ لِقَوْمٍ يُؤْمِنُونَ(سوررہ اعراف:203)
  • ’’اور جب نہ لائیں آپ ان کے پاس کوئی نشانی تو کہتے ہیں کیوں نہ تونے خود بنالیا اسے۔ کہہ دیجیے درحقیقت میں تو پیروی کرتا ہوں جو وحی کی جاتی ہے میری طرف میرے رب کی طرف سے یہ روشن دلائل ہیں تمہارے رب کی طرف سے اور ہدایت اور رحمت ہے اس قوم کے لیے جو ایمان لائے ہیں ‘‘۔
  • جَ النَّاسَ مِنَ الظُّلُمَاتِ إِلَى النُّورِ بِإِذْنِ رَبِّهِمْ إِلَى صِرَاطِ الْعَزِيزِ الْحَمِيدِ١(سورہ ابراھیم:1)
  • ’’الرٰ ( یہ) ایک کتاب ہے ہم نے نازل کیا ہے اسے آپ کی طرف تاکہ آپ نکالیں لوگوں کو کفر کے اندھیروں سے ایمان کی روشنی کی طرف ان کے رب کے حکم سے اس کے راستے کی طرف جو نہایت غالب بہت تعریف والا ہے‘‘۔
  • وَيَوْمَ نَبْعَثُ فِي كُلِّ أُمَّةٍ شَهِيدًا عَلَيْهِمْ مِنْ أَنْفُسِهِمْ وَجِئْنَا بِكَ شَهِيدًا عَلَى هَؤُلَاءِ وَنَزَّلْنَا عَلَيْكَ الْكِتَابَ تِبْيَانًا لِكُلِّ شَيْءٍ وَهُدًى وَرَحْمَةً وَبُشْرَى لِلْمُسْلِمِينَ(سورہ نحل:89)
  • ’’اور جس دن ہم کھڑا کریں گے ہر امت میں ایک گواہ ان پر خود انہی میں سے اور ہم لائیں گے آپ کو بطور گواہ ان لوگوں پر، اور ہم نے نازل کی آپ پر یہ کتاب (اس حال میں کہ) کھول کر بیان کرنے والی ہے ہر چیز کو اور ہدایت اور رحمت اور خوشخبری ہے مسلمین کے لیے‘‘۔
  • إِنَّ هَذَا الْقُرْآنَ يَهْدِي لِلَّتِي هِيَ أَقْوَمُ وَيُبَشِّرُ الْمُؤْمِنِينَ الَّذِينَ يَعْمَلُونَ الصَّالِحَاتِ أَنَّ لَهُمْ أَجْرًا كَبِيرًا (سورہ اسراء:9)
  • ’’بیشک یہ قرآن ہدایت دیتا ہے اس (راہ ) کی جو و ہ سب سے سیدھی ہے اور وہ خوشخبری دیتا ہے مومنوں کو جو عمل کرتے ہیں نیک کہ بیشک ان کے لیے بہت بڑا اجر ہے‘‘ ۔
  • ﴿وَلَقَدْ صَرَّفْنَا فِي هَذَا الْقُرْآنِ لِيَذَّكَّرُوا وَمَا يَزِيدُهُمْ إِلَّا نُفُورًا(سورہ اسراء:41)
  • ’’ اور یقیناً ہم نے پھیر پھیر کر بیان کیا ہے اس قرآن میں تاکہ وہ نصیحت حاصل کریں اور نہیں وہ اضافہ کرتا ان کو مگر نفرت میں‘‘ ۔
  • وَلَقَدْ صَرَّفْنَا لِلنَّاسِ فِي هَذَا الْقُرْآنِ مِنْ كُلِّ مَثَلٍ فَأَبَى أَكْثَرُ النَّاسِ إِلَّا كُفُورًا(سورہ اسراء:89)
  • ’’اور یقیناً طرح طرح سے بار بار بیان کیا ہے ہم نے انسانوں کے لیے اس قرآن میں ہر قسم کا مضمون، لیکن انکار کردیا (ماننے سے) اکثر انسانوں نے (اور نہ رہے) مگر کافر بن کر‘‘۔
  • ﴿فَإِنَّمَا يَسَّرْنَاهُ بِلِسَانِكَ لِتُبَشِّرَ بِهِ الْمُتَّقِينَ وَتُنْذِرَ بِهِ قَوْمًا لُدًّا(سورہ مریم:97)
  • ’’پس یقیناً ہم نے آسان کردیا اسے آپکی زبان (عربی ) میں تاکہ آپ خوشخبری دیں اس کیساتھ پر ہیزگاروں کو اور آپ ڈرائیں اس کیساتھ جھگڑالو قوم کو ‘‘۔
  • إِلَّا تَذْكِرَةً لِمَنْ يَخْشَى(سورہ طہ:3)
  • ’’ یہ تو نصیحت ہے اس کے لئے جو ( اللہ سے ) ڈرتا ہے‘‘۔
  • وَكَذَلِكَ أَنْزَلْنَاهُ قُرْآنًا عَرَبِيًّا وَصَرَّفْنَا فِيهِ مِنَ الْوَعِيدِ لَعَلَّهُمْ يَتَّقُونَ أَوْ يُحْدِثُ لَهُمْ ذِكْرًا(سورہ طہ:113)
  • ’’اور اسی طرح نازل کی ہے ہم نے یہ کتاب '' قرآن '' عربی زبان میں اور طرح طرح سے دہرایا ہے ہم نے اس میں تنبیہات کو شاید کہ لوگ پرہیزگار بن جائیں یا پیدا کرے یہ ان میں سمجھ بوجھ‘‘۔
  • وَإِنَّهُ لَتَنْزِيلُ رَبِّ الْعَالَمِينَ١٩٢ نَزَلَ بِهِ الرُّوحُ الْأَمِينُ١٩٣ عَلَى قَلْبِكَ لِتَكُونَ مِنَ الْمُنْذِرِينَ(سورہ شعراء:192)
  • ’’اور بیشک وہ یقیناً نازل کیا ہوا ہے سب جہانوں کے رب کا۔ اترا اس کو ( لیکر) امانت دار فرشتہ۔آپکے دل پر تاکہ آپ ہوجائیں ڈرانے والوں میں سے‘‘۔
  • كِتَابٌ أَنْزَلْنَاهُ إِلَيْكَ مُبَارَكٌ لِيَدَّبَّرُوا آيَاتِهِ وَلِيَتَذَكَّرَ أُولُو الْأَلْبَابِ(سورہ ص:29)
  • ’’ ( یہ )ایک کتاب ہے ہم نے نازل کیا ہے اسے آپ کی طرف بابرکت ہے تاکہ وہ غورو فکر کریں اس کی آیات میں اور تاکہ نصیحت پکڑیں عقل والے‘‘۔
  • وَمَا عَلَّمْنَاهُ الشِّعْرَ وَمَا يَنْبَغِي لَهُ إِنْ هُوَ إِلَّا ذِكْرٌ وَقُرْآنٌ مُبِينٌ٦٩ لِيُنْذِرَ مَنْ كَانَ حَيًّا وَيَحِقَّ الْقَوْلُ عَلَى الْكَافِرِينَ(سورہ یس:69)
  • ’’اور نہیں سکھائی ہم نے اس نبی کو شاعری اور نہیں تھی اس کے شایان شان یہ چیز۔ نہیں ہے یہ مگر ایک نصیحت اور صاف پڑھی جانے والی کتاب۔ تاکہ خبردار کرے وہ (اس کے ذریعہ سے) ہر اس شخص کو جو زندہ ہے اور حجت قائم ہو انکار کرنے والوں پر‘‘۔
  • قَالُوا يَا قَوْمَنَا إِنَّا سَمِعْنَا كِتَابًا أُنْزِلَ مِنْ بَعْدِ مُوسَى مُصَدِّقًا لِمَا بَيْنَ يَدَيْهِ يَهْدِي إِلَى الْحَقِّ وَإِلَى طَرِيقٍ مُسْتَقِيمٍ(سورہ احقاف:30)
  • ’’انہوں ( جنوں ) نے کہا اے ہماری قوم ! ہم نے سنی ہے ایک کتاب جو نازل کی گئ ہے موسیٰ کے بعد جو تصدیق کرنے والی ہے ان کتابوں کی جو اس سے پہلے آچکی ہیں اور جو رہنمائی کرتی ہے حق کی طرف اور راہ راست کی طرف‘‘۔
  • قُلْ أُوحِيَ إِلَيَّ أَنَّهُ اسْتَمَعَ نَفَرٌ مِنَ الْجِنِّ فَقَالُوا إِنَّا سَمِعْنَا قُرْآنًا عَجَبًا١ يَهْدِي إِلَى الرُّشْدِ فَآمَنَّا بِهِ وَلَنْ نُشْرِكَ بِرَبِّنَا أَحَدًا(سورہ جن:21)
  • ’’(اے نبی) کہو وحی بھیجی گئی ہے میری طرف کہ غور سے سنا ایک گروہ نے جنوں میں سے۔ سو کہا انہوں نے : بلاشبہ ہم نے سنا ہے ایک قرآن بڑا عجیب۔ جو رہنمائی کرتا ہے راہ راست کی طرف اس لیے ہم ایمان لے آئے ہیں اس پر اور ہرگز نہ شریک بنائیں گے ہم (اب) اپنے رب کے ساتھ کسی کو‘‘۔