Categories
سابقہ سوالات

کیا کسی مصیبت کے وقت اذانیں دینا سنت عمل ہے ؟

جواب :  وبا کے پھوٹنے پر گھروں میں بے  وقت  اذانیں دینے کے متعلق تین سے چار روایات کو دلیل بنانے کی کوشش کی جاتی ہے۔ان روایات کی سند میں ضعیف، مجھول، متہم بالکذب حتی کہ کذاب راوی بھی شامل ہیں۔ لہٰذا اس ضمن میں پائی جانے والی تمام روایات سخت ضعیف اور موضوع ہیں۔ اور ان روایات سے استدلال ناقابل حجت ہے۔ مزید یہ کہ نبی ﷺ کے دور میں بھی وبائی امراض ، طاعون اور جذام جیسی بیماریوں کا ذکر صحیح احادیث میں ملتا ہے لیکن ان مواقع پر کوئی بھی ذکر اذان وغیرہ دینے کے متعلق ہمیں نہیں ملتا ہے۔ چنانچہ وبائی امراض پھوٹنے پر اذانیں دینا غیر ثابت شدہ عمل ہے۔ لہٰذا وباء یا کسی آفت و مصیبت میں مسنون و مشروع اعمال و اذکار کے ذریعے سے ہی ہمیں اللہ تعالیٰ کا قرب حاصل کرنا چاہئے۔

Categories
سابقہ سوالات

گھر میں برکت اور پریشانی دور کرنے کا وظیفہ بتادیں۔

جواب : اسلام میں اس قسم کے وظائف کا کوئی ذکر نہیں ، یہ لوگوں کی خودساختہ بدعات ہیں۔  اپنے گھر میں برکت کے لئے کتاب اللہ کا بتایا ہوا طریقہ اپنائیں۔ سب سے پہلےاپنے ایمان کو کفر و شرک سے مکمل پاک کریں۔ ہر قسم کی بدعات سے دور ہوں۔ قرآن مجید کو معنیٰ کیساتھ پڑھیں ، پنج وقتہ صلوٰۃ کا اہتمام کریں۔ فسق و فجو رسے دور رہیں اور گھر میں اسلامی  اقدار نافذ کریں ، ان شاء اللہ دنیا میں برکت  آئے گی اور آخرت  میں جنت کے حقدار ٹھہریں گے۔

پیری مریدی جس کا اسلام میں کوئی تصور نہیں ، یہ ساری خرافات وہاں سے  ہی شروع ہوئی ہیں۔ پیر صاحب اپنی قابلیت اور علم کی دھاک بٹھانے کے لئے اس قسم کے خود ساختہ وظائف بناتے اور اس کی تبلیغ کرتے ہیں۔نبی ﷺ اور صحابہ ؓ سے زیادہ دین کا جاننے والا  اور کون ہو سکتا ہے، لیکن اس دور میں اس قسم کی باتوں کا کوئی وجود نہیں ملتا۔

Categories
سابقہ سوالات

لڑکا یا لڑکی وہ دونوں اگر ایک دوسرے کو پسند کرتے ہوں اور ماں باپ کہیں اور شادی کرنا چاہیں تو کیا کریں ؟

جواب : اسلام میں جو نظام بیان کیا گیا ہے اس میں تو بالغ لڑکے اور لڑکی کا ایک دوسرے سے ملنا ، بات کرنا جائز ہی نہیں۔ اسلام میں مکمل پردے کا حکم ہے۔ یہ جو آج کل بے حیائی ، فحاشی، نامحرموں کا ایک دوسرے سے ملنا ، بات کرنا ہے تو اس کی وجہ یہ ہے کہ  ہمارے گھروں سے پردہ اٹھ گیا ہے۔ جب لڑکا یا لڑکی ایسے مسائل کا شکار ہو جاتے ہیں تو انہیں برا کہا جاتا ہے ، لیکن یہ کام تو خود لڑکی کے والدین کرتے ہیں، وہ اپنی لڑکی تک نا محرم کو رسائی دیتے ہیں تو بات اسقدر سنگین ہوتی ہے۔

بہرحال نکاح میں دونوں کی مرضی شامل ہونا چاہئیے ، اگر کسی لڑکی کا نکاح اس کی مرضی کے خلاف کردیا جاتا ہے تو وہ اپنا نکاح فسق کرا سکتی ہے۔

Categories
سابقہ سوالات

عورت اعتکاف مسجد میں کرے یا اپنے گھر میں ؟

عورت کے اعتکاف کرنے کے حوالے سے احادیث میں بہت زیادہ تفصیلات نہیں ملتی چند روایات سے یہ تو پتا چلتا ہے کہ ازواج المطہرات نے اللہ کے نبی ﷺ کی زندگی میں ایک سال مسجد خیمے لگائے جنہیں اکھڑوا دیا گیا اور بعد از وفات بھی لیکن یہ تفصیل موجود نہیں کہ ان کہ اس عمل کو دیگر صحابیات نے اپنایا ہو. مساجد میں اعتکاف کیا ہو اور گھر میں اعتکاف کی تو کوئی ایک دلیل بھی موجود نہیں اگر ایسا ہوتا کہ عورتیں مساجد میں اعتکاف کرتیں تو اس پر کثیر روایات ہوتیں اس لئے اس عورت کو چاہیے کہ وہ اپنے گھر والوں کی ضروریات کو پورا کرے اور بقایا وقت گھر میں رہتے ہوئے عبادت کرے اسے گھر یا مسجد میں اعتکاف کرنے کی ضرورت نہیں.

Categories
سابقہ سوالات

حالت صوم میں کونسے امراض کا فدیہ دیا جائے گا اور کونسے بعد میں پورا کرنے ہوں گے؟

قرآن میں اللہ کا حکم ہے کہ
مَنْ كَانَ مَرِيضًا أَوْ عَلَى سَفَرٍ فَعِدَّةٌ مِنْ أَيَّامٍ أُخَرَ۔۔۔۔(البقرۃ: 185)
ترجمہ: تم میں سے جومریض ہو یا سفر پر ہو، تو وہ دیگر ایّام میں اس گنتی کو پورا کرے
لہٰذا بیماری یا سفر میں چھوٹ جانے والے صیام کی گنتی بعد میں پوری کرنی ہوگی۔ اگر موت تک وہ گنتی پوری نہ ہوسکی، تو حدیث کے مطابق میت کے وارثین اُس کی جانب سے اُس کا فدیہ دیں گے۔
جبکہ دائمی مریض، یا ایسے بوڑھے افراد جو اب صوم رکھنے کی طاقت نہ رکھتے ہوں وہ فدیہ دینگے. دیگر تمام طرح کی صورتوں میں قضاء ہونے والے صوم کی گنتی بعد میں پوری کی جائے گی.
واضح رہے کہ حمل اور رضاعت دائمی امراض کے زمرے میں نہیں آتے، اور ان کی بھی قضا بعد میں پوری کرنا ہوگی ہوگی.

Categories
سابقہ سوالات

کیا یہ حدیث صحیح ہے ’’علم حاصل کرو چاہے تمہیں چین ہی جانا پڑے۔‘‘

اُطلُبُوا العلم ولو بالصِّین.
علم حاصل کرو خواہ وہ چین ہی میں کیوں نہ ہویہ ایک موضوع(من گھڑت) روایت ہے۔
یہ حدیث کسی شخص کی وضع کردہ ہے اور جن دو تین سندوں سے یہ حدیث مروی ہے۔ سب میں سخت ضعیف بلکہ وضاع راوی موجود ہیں جن کی بنا پر اس کا موضوع (بناوٹی) ہونا ظاہر ہے۔

Categories
سابقہ سوالات

اگر کسی نے مال یا رقم کسی کو ادھار یا قرض دیا ہے تو زکوٰۃ کون ادا کرے گا. رقم کا مالک یا پھر جس نے ادھار لے رکھا ہے.

رقم کا اصل مالک قرض یا ادھار دینے والا لہٰذا رقم کا مالک جب اپنے قابل زکوٰۃ اثاثوں کا حساب کرے گا تو اس ادھار دی گئی رقم کو بھی ساتھ شامل کر کے اس میں سے زکوٰۃ نکالے گا کیونکہ وہ اس رقم کا اصل مالک عارضی طور پر اس نے یہ رقم کسی کو قرض دی ہے جبکہ مقروض شخص بھی اپنے اثاثوں کا حساب کر کے اس ادھار لی گئی رقم کو منفی کرکے حساب لگائے گا.
لہٰذا زکوٰۃ رقم کے اصل مالک ہی ادا کرنی ہے.

Categories
سابقہ سوالات

ہاتھ اٹھا کر دعا کے متعلق کئی احادیث ملتی ہیں تو پھر آپ لوگ منع کیوں کرتے ہیں؟

اس معاملے میں اگر تمام احادیث کو یکجا کیا جائے تو یہ معلوم ہوتا ہے کہ صلوٰۃ کے بعد اجتماعی طور پر ہاتھ اٹھا کر دعا کرنا تو بدعت کے زمرے میں آتا ہے۔ اور صلوٰۃ کے بعد ہاتھ اٹھا کر دعا کرنے کی تمام احادیث ضعیف ہیں، اور صحیح ا حادیث سے صلوٰۃ کے بعد نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا مختلف تسبیحات و اذکار پڑھنا تو ثابت لیکن ہاتھ اٹھا کر دعا کرنا ؛ نا تو کسی صحیح حدیث کے مطابق نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے عمل سے ثابت ہے اور نا ہی صحابہ اکرام کے۔ اور ہمیں حکم یہی دیا گیا ہے کہ صلوٰۃ اُسی طرح قائم کی جائے جیسے نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے۔ لہٰذا صلوٰۃ کے بعد ہاتھ اٹھا کر دعا کرنا بدعت کے زمرے میں ہی شمار کیا جائے گا۔
جبکہ صلوۃ کے علاوہ دیگر بہت سے مواقع پر اللہ کے نبی سے انفرادی طور پر ہاتھ اٹھا کر دعا کرنا تو ثابت ہے لہٰذا کوئی شخص کبھی انفرادی طور پر ہاتھ اٹھا کر دعا کرلے تو اس کو بدعت نہیں قرار دیا جا سکتا، مگر اجتماعی دعا تو ان مواقعوں پر بھی ثابت نہیں.
١.حج کے موقعے پر کعبہ کو دیکھ کر دعا کرنا
٢.ایک شخص کا اپنے والد کے لئے دعا کی درخواست کرنا.
٣.اللہ کے نبی کا خالد بن ولید کی ہاتھوں ہونے والے قتل سے لاتعلقی کا اظہارِ کرتے ہوئے دعا کرنا.
اور دیگر بہت سے واقعات میں دعا کرنا

Categories
سابقہ سوالات

سوال : کیا حالت حیض یا حاملہ ہونے کی صورت میں طلاق نہیں ہوتی؟

جواب : قرآن و احایث صحیحہ میں ایسی کسی بات کa کوئی وجود نہیں۔ عورت کسی بھی حال میں ہو  جب شوہر نے طلاق  یا ہم معنی  الفاظ ادا کردئیے تو طلاق نافذ ہو جائے گی۔